رسائی کے لنکس

اسلام آباد: دو مغوی چینی شہریوں کی ہلاکت کی تصدیق


دفتر خارجہ کے مطابق چینی شہریوں لی زِنگ یانگ اور مینگ لی سی کو اسی سال 24 مئی کو کوئٹہ میں جناح ٹاؤن کے علاقے سے اغوا کیا گیا،جس کے بعد ان کے حوالے سے کوئی تفصیل سامنے نہیں آئی اور جون میں انہیں قتل کردیا گیا

پاکستانی دفتر خارجہ نے کوئٹہ شہر سے اغوا ہونے والے دو چینی شہریوں کی ہلاکت کی تصدیق کردی ہے اور کہا ہے کہ ڈی این اے ٹیسٹ سے اس بات کی تصدیق ہوگئی ہے کہ بلوچستان میں کچلاک کے علاقہ سےملنے والی لاشیں انہی دو چینی شہریوں کی تھیں۔

دفتر خارجہ کے مطابق چینی شہریوں لی زِنگ یانگ اور مینگ لی سی کو اسی سال 24 مئی کو کوئٹہ میں جناح ٹاؤن کے علاقے سے اغوا کیا گیا،جس کے بعد ان کے حوالے سے کوئی تفصیل سامنے نہیں آئی اور جون میں انہیں قتل کردیا گیا۔

دفتر خارجہ کی طرف سے چینی حکومت اور مقتولین کے عزیز و اقارب سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے، بیان میں مزید کہا گیا کہ پاکستان ہر قسم کی دہشت گردی کی مذمت کرتا ہے اور اقوام عالم سے مل کر دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پر عزم ہے۔

بیان میں اس عزم کا اظہار کیا گیا کہ پاکستان حکومت اس اندوہناک واقعے کی مکمل تحقیقات کرائے گی اور اس میں ملوث افراد کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔

پاکستان کی طرف سے چینی جوڑے کے قتل کی تصدیق، شدت پسند تنظیم ’داعش‘ کی طرف سے اُنھیں اغوا کے بعد قتل کیے جانے کے دعوے کے کئی ماہ بعد کی گئی ہے۔ اس سے قبل، پاکستان کا کہنا تھا کہ جب تک لاشیں نہیں مل جاتیں اس وقت تک ان کی ہلاکت کی تصدیق نہیں کی جا سکتی۔

ڈیڑھ ماہ قبل کچلاک کے علاقہ سے دو لاشیں ملیں ’’جو انتہائی بری حالت میں تھیں۔‘‘ ان پر شک ظاہر کیا جارہا تھا کہ یہ لاشیں چینی باشندوں کی ہیں جن کی اب ڈی این اے ٹیسٹ رپورٹ آنے کے بعد تصدیق ہوگئی ہے۔

پاکستانی وزارت خارجہ اور وزارت داخلہ نے الزام عائد کیا تھا کہ کوئٹہ سے اغوا ہونے والے چینی شہری تبلیغی سرگرمیوں میں مصروف تھے۔

اغوا ہونے والے دو چینی باشندوں نے کاروباری ویزے کی خلاف ورزی کی اور کوئٹہ میں ایک کورین باشندے سے اردو سیکھنے کے نام پر تبلیغی سرگرمیوں میں مصروف ہوگئے تھے۔

پاکستان کے صوبہٴ بلوچستان میں سکیورٹی کی صورتحال ایک طویل عرصہ سے خرابی کا شکار ہے اور صوبے میں مختلف مقامات سے ماضی میں مسخ شدہ لاشیں بھی ملتی رہی ہیں۔ اس صورتحال کے پیشِ نظر غیر ملکی افراد کو خصوصی سکیورٹی فراہم کی جاتی ہے۔ لیکن، یہ دونوں چینی شہری کسی سکیورٹی کے بغیر عام سے علاقے میں رہائش پذیر تھے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG