رسائی کے لنکس

logo-print

لاؤس: زیر تعمیر ڈیم منہدم، 19 افراد ہلاک


جنوبی لاؤس میں پیر کے روز زیر تعمیر ڈیم منہدم ہونےکے تباہ کُن واقعے میں اب تک کم از کم 19 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی جاچکی ہے، جس کے نتیجے میں ہزاروں افراد بے گھر جب کہ سینکڑوں لاپتا ہیں۔

ژی پیان شینام نوئے ڈیم پیر کی شام گئے جنوبی مشرقی صوبہٴ اتاپیو میں منہدم ہوا، جس کے نتیجے میں ضلعے بھر میں پانچ ارب کیوبک میٹر پانی کے بہاؤ کی زد میں آکر سینکڑوں گھر تباہ اور بیسیوں مکین بے گھر ہوگئے۔

سرکاری تحویل میں کام کرنے والے خبر رساں ادارے، ’کے پی ایل‘ نے ڈیم کے نشیبی علاقے میں آباد لوگ بے گھر ہوئے جن کی تعداد 6600 بتائی ہے۔ ڈیم منہدم ہونے کا واقعہ ملک کے دارلحکومت وینتیان کے جنوب میں تقریباً 550 کلومیٹر کے فاصلے پر بتایا جاتا ہے۔

بازیابی اور امداد کی کوششوں میں مدد دینے کے لیے جنوبی کوریائی صدر مون جائی نے ایک ہنگامی دستے کو لاؤس روانہ کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔

جنوبی کوریا کے دو اداروں، ’ایس کے‘ انجنیئرنگ اور تعمیرات اور کوریا ویسٹرن پاور اُس کنسورشیم میں شریک تھے جو 410 میگاواٹ کے اِس منصوبے کی تعمیر سے وابستہ تھے۔

ژی پیان شینام نوئے ڈیم تقریباً ایک ارب ڈالر کی لاگت کے تخمینے سے آئندہ برس مکمل ہونا تھا۔

تباہ کُن حادثے سے قبل پیر کی رات ایک مراسلے میں کنسورشیم نے انتباہ جاری کیا تھا کہ ژی پیان دریا میں پانی کا بہاؤ خطرناک حد کو چھو رہا تھا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG