رسائی کے لنکس

logo-print

امریکہ کی تعمیر میں تارکینِ وطن کا اہم کردار ہے، صدر اوباما


اپنے خطاب میں صدر اوباما نے کہا کہ امریکہ کے وہ تمام شہری جو اس سرزمین کے اصل باشندے نہیں ہیں، کہیں نہ کہیں سے ترک وطن کرکے ہی امریکہ میں آباد ہوئے ہیں۔

صدر براک اوباما نے امریکہ کی تعمیر میں تارکین وطن کے کردار کو سراہا ہے۔

منگل کو واشنگٹن میں مختلف ملکوں سے تعلق رکھنے والے 31 تارکینِ وطن کو امریکی شہریت دینے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر اوباما نے کہا کہ ترکِ وطن ایک ایسا عمل ہے جس سے امریکی قوم کی تاریخ کا آغاز ہوتا ہے اور جس نے امریکہ کو غیر معمولی ملک بنایا ہے۔

امریکہ کی نیشنل آرکائیوز کی عمارت میں ہونے والی تقریب میں چار مختلف براعظموں سے تعلق رکھنے والے افراد نے امریکی شہریت کا حلف اٹھایا۔

اپنے خطاب میں صدر اوباما نے کہا کہ امریکہ کے وہ تمام شہری جو اس سرزمین کے اصل باشندے نہیں ہیں، کہیں نہ کہیں سے ترک وطن کرکے ہی امریکہ میں آباد ہوئے ہیں۔

امریکی صدر کا کہنا تھا کہ آج کے میکسیکن تارکین وطن کو وہ سو سال پہلے کے کیتھولک تارکین وطن کے طور پر دیکھتے ہیں اور شام کے وہ باشندے جو آج پناہ کی تلاش میں ہیں، وہ دوسری جنگ عظیم کے یہودی پناہ گزینوں کی طرح ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان نئے امریکیوں میں ہم اپنی امریکی کہانی دیکھ سکتے ہیں۔

صدر اوباما نے اپنے خطاب میں دوسری جنگ عظیم کے دوران پیش آنے والے ان واقعات کا بھی ذکر کیا جب جرمن اور اطالوی حراست میں لیے گئے تھے لیکن انھیں امریکہ میں داخل ہونے سے روک دیا گیا تھا اور جب جاپانی امریکیوں کو کیمپ میں ڈال دیا گیا تھا۔

صدر اوباما نے کہا کہ اس وقت امریکی قیادت نے خوف کے آگے ہتھیار ڈال دیے تھے اور ان اقدار کو نظر انداز کردیا تھا جن کی بنیاد پر امریکہ تعمیر ہوا ہے۔ صدر کا کہنا تھا کہ ہم سب کو لازمی عہد کرنا چاہے کہ اب آئندہ ایسا نہیں ہوگا۔

XS
SM
MD
LG