رسائی کے لنکس

logo-print

آئی ایس پی آر کی طرف سے ’سائبر الرٹ‘ جاری


میجر جنرل آصف غفور (فائل)

آئی ایس پی آر کے بیان کے مطابق’’ 'invite@ispr.press' کی طرف سے موصول ہونے والی اِی میل کو نا کھولا جائے اگر نادانستہ طور پر یہ اِی میل کھول بھی لی جائے تو اس کی ساتھ منسلک کسی بھی لنک پر کلک نا کیا جائے جس میں کسی قسم کی معلومات مانگی گئی ہوں‘‘

پاکستان فوج کے شعبہٴ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی طرف سے انتباہ جاری کیا گیا ہے کہ' آئی ایس پی آر' کا نام استعمال کر کے ’’ایسی جعلی اِی میل بھیجی جار ہی ہے جس کے کھولنے سے کمپوٹر، آئی پیڈ یاموبائل فون میں وائرس داخل ہو سکتا ہے‘‘۔

آئی ایس پی آر کے بیان کے مطابق’’ 'invite@ispr.press' کی طرف سے موصول ہونے والی اِی میل کو نا کھولا جائے اگر نادانستہ طور پر یہ اِی میل کھول بھی لی جائے تو اس کی ساتھ منسلک کسی بھی لنک پر کلک نا کیا جائے جس میں کسی قسم کی معلومات مانگی گئی ہوں‘‘۔

فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے ایک ٹویٹر بیان میں لوگوں سے کہا ہے کہ یہ جعلی اِی میل ہے اور آئی ایس پی آر سے اس کا کوئی تعلق نہیں ہے اور اگر انہیں ایسی کوئی اِی میل ملے تو متعلقہ حکام کو اس بارے میں آگاہ کریں۔

تاہم، آئی ایس پی آر کی طرف سے اس بارے میں مزید وضاحت نہیں کی گئی کہ انہیں پہلی بار اس جعلی اِی میل کے بارے میں کب معلوم ہوا اور اس کو بھیجنے والے کون لوگ ہیں اور ناہی اس بارے میں بتایا گیا کہ کیا کوئی فرد یا سرکاری ادارہ اس اِی میل سے متاثر ہوا ہے۔

عموماً جعلی اِی میل کی ذریعے دوسرے لوگوں کی ذاتی کمپوٹر یا سرکاری کمپوٹر نیٹ ورک تک رسائی حاصل کرنے کی کوشش کی جاتی ہے، جس کا بظاہر مقصد معلومات چرانا یا نقصان پہنچانا ہے اور اس حوالے سے دنیا کے کئی ملکوں کی طرف سے اپنے شہریوں اور سرکاری اداروں کو ایسے سائبر حملوں سے متعلق انتباہ جاری کیا جاتا ہے، تاکہ ایسے حملوں سے محفوظ رہا جائے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG