رسائی کے لنکس

logo-print

پہاڑوں کا عالمی دن اور پاکستان کی اہمیت


پاکستان کے شمالی علاقے میں واقع ایک پہاڑی سلسلہ

دنیا کی چودہ بلند ترین چوٹیوں میں سے پانچ پاکستان میں واقع ہیں جن میں دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو بھی شامل ہے۔

پہاڑوں کی اہمیت کو اجاگر کرنے کے عالمی دن کے موقع پر منگل کو پاکستان میں سرکاری و نجی سطح پر مختلف تقاریب کا انعقاد کیا گیا۔

ملک میں سیاحت کے فروغ کے سرکاری ادارے ’پاکستان ٹوئرازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن‘ کے سربراہ میر شاہ جہان کیتھران نے کہا کہ دنیا کی چودہ بلند ترین چوٹیو ں میں سے پانچ پاکستان میں واقع ہیں جن میں دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی کے ٹو بھی شامل ہے۔

جب کہ دنیا کے تین پہاڑی سلسلے قراقرم ہمالیہ اور ہندوکش بھی پاکستان میں ملتے ہیں ان چوٹیوں کو سر کرنے کے لیے بڑی تعداد میں غیر ملکی سیاح پاکستان آتے ہیں۔

اُنھوں نے کہا کہ پہاڑوں کے عالمی دن کو منانے کا مقصد انسانی زندگی میں ان کی اہمیت ، اس کے فوائد اور پہاڑی علاقوں کی ترقی میں حائل رکاوٹوں کو اجاگر کرنا ہے۔

پاکستان نے سیاحوں کو راغب کرنے کے لیے ”ایک ارب سیاح ایک ارب مواقع“ کے نام سے ایک مہم شروع کی ہے جس کے تحت ملک بھر میں موجود 18 سیاحتی معلوماتی مراکز کے علاوہ صوبہ سندھ میں ایک اور بلوچستان میں تین نئے سیاحتی معلوماتی مراکز قائم کیے گئے ہیں تاکہ ان علاقوں سے گزرنے والے سیاحوں اور مسافروں کو درست معلومات فراہم کی جائیں۔

آپ کی رائے

تبصرے دکھائیں

XS
SM
MD
LG