رسائی کے لنکس

’ٹیک ویمن‘ پروگرام میں شرکت کے لیے پاکستانی خواتین امریکہ روانہ


پاکستانی خواتین امیدواروں کو پانچ ہفتوں پر محیط اس پروگرام میں حصہ لینے کے لیے ایک مسابقتی عمل کے ذریعہ منتخب کیا گیا ہے۔

دس پاکستانی خواتین سائنس، ٹیکنالوجی، انجینئرنگ اور ریاضی کے شعبوں میں ابھرتی ہوئی خواتین رہنماؤں کے تربیتی و تبادلہ پروگرام ’’ٹیک ویمن 2017 ‘‘میں شرکت کے لیے امریکہ روانہ ہوگئی ہیں۔

اسلام آباد میں امریکی سفارت خانے سے جاری ایک بیان کے مطابق یہ پہلا موقع ہے کہ پاکستانی خواتین امریکی حکومت کے فنڈ سے چلنے والے ٹیک ویمن پروگرام میں شرکت کریں گی۔

پاکستانی خواتین امیدواروں کو پانچ ہفتوں پر محیط اس پروگرام میں حصہ لینے کے لیے ایک مسابقتی عمل کے ذریعہ منتخب کیا گیا ہے۔

یہ پروگرام سان فرانسسکو، کیلی فورنیا اور واشنگٹن ڈی سی میں منعقد ہوگا۔

اس پروگرام میں افریقہ، وسطی و جنوبی ایشیا اور مشرق وسطیٰ سے تعلق رکھنے والی 100 خواتین شرکت کر رہی ہیں۔

سفارت خانے سے جاری بیان کے مطابق پروگرام میں شرکت کرنے والی ایک پاکستانی خاتون صائمہ شبیر نے کہا ہے کہ پاکستان کو سائنس کے شعبے میں مزید خواتین کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ وہ پاکستان سے ٹیک ویمن کی ابھرتی ہوئی رہنماؤں کے پہلے گروپ میں شمولیت پر بے حد خوش ہیں۔

ان کے بقول یہ ایک دیرپا نیٹ ورک اور ثقافتی روابط کے قیام کے لیے علمی تبادلے کا ایک شاندار موقع ہے۔

امریکی سفارت خانے کی ثقافتی امور کی افسر آرلیسا رینالڈز کا کہنا ہے کہ وہ ان پاکستانی خواتین کے نت نئے خیالات سننے کی منتظر رہیں گی جو یہ امریکہ میں اپنی تربیت کے دوران قائم کریں گی۔

اگرچہ یہ پہلا سال ہے جب پاکستانی خواتین ٹیک ویمن پروگرام میں شرکت کر رہی ہیں، لیکن امریکی محکمہ خارجہ ہر سال لگ بھگ ایک ہزار پاکستانیوں کو مختلف پیشہ ورانہ اور تعلیمی تبادلہ پروگراموں پر امریکہ بلاتا ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG