رسائی کے لنکس

logo-print

سینٹرل کانٹریکٹ میں شامل کرکٹرز کی تعداد میں کمی، ملک اور حفیظ آؤٹ


پی سی بی نے نئے کانٹریکٹ میں کھلاڑیوں کے معاوضے میں اضافہ کیا ہے، گزشتہ سال کے مقابلے میں کھلاڑیوں کی تعداد 33 سے کم کر کے 19 کر دی ہے — فائل فوٹو

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے شعیب ملک اور محمد حفیظ کے سوا باقی کرکٹرز کو 20-2019 کے لیے سینٹرل کانٹریکٹس جاری کر دیے ہیں۔

پی سی بی کا کہنا ہے کہ سینٹرل کانٹریکٹ نہ دیے جانے کے باوجود دونوں سینئر کھلاڑی سلیکشن کے لیے دستیاب ہوں گے۔

پی سی بی کے مینیجنگ ڈائریکٹر وسیم خان نے نئے سینٹرل کانٹریکٹس میں شامل کھلاڑیوں کے معاوضے میں نمایاں اضافہ کیا ہے جبکہ کھلاڑیوں کی تعداد گزشتہ سال کے مقابلے میں 33 سے کم کر کے 19 کردی گئی ہے۔

پی سی بی کا نیا کانٹریکٹ یکم جولائی 2019 سے 30 جون 2020 تک کی مدت کے لیے نافذ العمل ہوگا۔

پی سی بی کے بقول کنٹریکٹس پچھلے ایک سال کے دوران کھلاڑیوں کی فٹنس، کارکردگی اور مستقبل کے تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے کیے گئے ہیں۔

نئے کانٹریکٹس کے تحت کھلاڑیوں کو اے، بی اور سی کیٹیگری میں رکھا گیا ہے۔

کیٹیگری 'اے' میں شامل کھلاڑیوں میں کپتان سرفراز احمد، بابر اعظم اور یاسر شاہ شامل ہیں جب کہ کیٹیگری 'بی' کا حصہ بننے والوں میں اسد شفیق، اظہر علی، حارث سہیل، امام الحق، محمد عباس، شاداب خان، شاہین شاہ آفریدی اور وہاب ریاض شامل ہیں۔

سینٹرل کانٹریکٹ کی 'سی' کیٹیگری میں فاسٹ بولر محمد عامر، عابد علی، حسن علی، فخر زمان، عماد وسیم، محمد رضوان، شان مسعود اور عثمان شنواری شامل ہیں۔

پی سی بی نے یکم جولائی 2019 سے جون 2020 تک کے دوران کھیلی جانے والی سیریز کے شیڈول کا بھی اعلان کردیا ہے جس کے مطابق پاکستان سری لنکا کے خلاف دو ٹیسٹ، تین ون ڈے اور تین ٹی ٹوئنٹی میچز کی سیریز کھیلے گا۔

اس عرصے کے دوران پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان دو ٹیسٹ، تین ٹی ٹوئنٹی اور بنگلہ دیش سے دو ٹیسٹ اور تین ون ڈے میچز کھیلے جائیں گے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG