رسائی کے لنکس

logo-print

مجھے پاکستان سے دلی محبت ہے: ایوا زوبیک


پی آئی اے کے طیارے میں متنازعہ ویڈیو والی غیر ملکی خاتون اور ٹریول ولوگر ایوا زوبیک نے کہا ہے کہ ’’مجھے پاکستان سے دلی محبت ہے، پاکستان آنے کا اصل مقصد سیاحت کو فروغ دینا ہے۔ آئندہ آنے والے دنوں میں پاکستان میں ٹریول شو منعقد کرنا چاہتی ہوں‘‘۔

اسلام آباد کے نیشنل پریس کلب میں ایک نیوز کانفرنس میں ایوا زوبیک نے کہا یوم آزادی کے موقع پر پی آئی کے نمائندے نے رابطہ کیا کہ جشن آزادی سے متعلق آپ سے ’ڈیمو ویڈیو‘ بنانا چاہتے ہیں۔ اس ویڈیو میں پی آئی اے کا جہاز اصلی نہیں بلکہ ایک ڈیمو جہاز تھا۔

ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد پاکستانی لوگوں کی طرف سے تعریف کے ساتھ اُنہیں تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ’’پاکستان آنے کا اصل مقصد یہاں کی سیاحت کو فروغ دینا ہے اور بیرونی ممالک سیاحوں کی پاکستان سے متعلق منفی سوچ کو مثبت سوچ میں تبدیل کرنا ہے‘‘۔

ایوا نے کہا کہ ’’پاکستان دنیا کا خوبصورت ملک ہے۔ ہنزہ، سکردو، گلگت، ناران، کاغان جیسے خوبصورت مقامات پر گئی اور ان مقامات کو بہت حسین پایا۔‘‘

ایوا زوبیک نے کہا کہ ان کے ساتھ سوشل میڈیا کی ایک بڑی ٹیم ہےجو پاکستان کے مختلف مقامات کی ویڈیوز، تصاویریں بنا کر دنیا کو بتانے کی کوشش کرتے ہیں کہ کس طرح آپ پاکستان آسکتے ہیں اور یہاں کے خوبصورت مقامات کی سیر سکتے ہیں۔ لاکھوں کی تعداد میں پاکستانی نوجوان سوشل میڈیا کا ستعمال کرتے ہیں اور اگر پاکستانی سیاحت کو ایسے فروغ دیا جائے تو پاکستان کو کثیر زرمبادلہ حاصل ہوسکتا ہے۔

ایوا زو بیک کا کہنا تھا کہ پاکستانی نوجوانوں سمیت مختلف علاقائی تنظیموں کو ساتھ لیکر اپنی ٹیم کے ہمراہ پاکستان کی خوبصورتی سے متعلق معلومات بتا رہی ہوں۔ سوشل میڈیا پر میرے لاکھوں فالورز ہیں۔ ایک دو ہفتوں میں پاکستان میں ایک ٹریول شو منعقد کر نا چاہتی ہوں۔ جس کا مقصدپاکستا ن کا سافٹ امیج دنیا کو دکھانا ہے۔

ایوا کا کہنا تھا کہ مجھے پاکستان سے محبت ہے۔ میری نیت پاکستانی جھنڈے کو عزت دینے اور یوم آزادی کی خوشیاں منانے کی تھی۔

ایوا زو بیک نے کہا کہ پی آئی اے کی ملازم نہیں، ویڈیو بنانے کے لئے پی آئی اے نے انہیں ہائیر کیا تھا۔

پولش سیاح کا کہنا تھا کہ ’’سب سے پہلے پاکستان کے بارے میں بین اقوامی سطح پر موجود غلط تاثر کو ختم کرنا ہوگا۔ سیاحتی مقامات کے بارے میں معلومات کی فراہمی بھی اہم ہے، جبکہ بعض علاقوں میں انفراسٹرکچر پر زیادہ توجہ دینے کی ضرورت ہے‘‘۔

پولینڈ سے تعلق رکھنے والی ایوا زوبیک نے سبز سفید شلوار قیمض پہن کر پاکستانی جھنڈے کے ساتھ ایک ویڈیو بنائی تھی جس پر چئیرمین نیب نے نوٹس لیا تھا۔ لیکن بعد میں اس نوٹس کو واپس لے لیا گیا تھا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG