رسائی کے لنکس

logo-print

برنی سینڈرز مشی گن پرائمری میں غیر متوقع طور پر کامیاب


کئی انتخابی جائزوں سے اندازہ لگایا گیا تھا کہ ہلری کلنٹن اس ریاست میں انتخاب جیت جائیں گی مگر سینڈرز سخت مقابلے کے باوجود جیتنے کے لیے درکار ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے۔

ورمونٹ کے سینیٹر برنی سینڈرز نے منگل کو شمالی ریاست مشی گن میں غیر متوقع طور پر سابق وزیر خارجہ ہلری کلنٹن کو ڈیموکریٹک پارٹی کے پرائمری انتخاب میں شکست دے کر کامیابی حاصل کر لی ہے۔

کئی انتخابی جائزوں سے اندازہ لگایا گیا تھا کہ ہلری کلنٹن اس ریاست میں انتخاب جیت جائیں گی مگر سینڈرز سخت مقابلے کے باوجود جیتنے کے لیے درکار ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئے۔ تاہم ہلری نے منگل کو ہی جنوبی ریاست مسیسپی میں ہونے پرائمری انتخاب میں آسانی سے کامیابی حاصل کر لی۔

برنی سینڈرز نے کہا کہ مشی گن میں کامیابی کا مطلب ہے کہ ان کا ’’سیاسی انقلاب‘‘ ملک بھر میں مقبول ہے اور ان علاقوں میں ان کی مہم سب سے زیادہ مضبوط ہے جہاں ابھی رائے شماری نہیں کی گئی۔

انہوں نے انتخابی مہم کی بدعنوانی پر مبنی مالی معاونت، غیر منصفانہ معیشت اور ملک کے ناکام فوجداری نظام عدل کے خلاف اپنے پیغام کو اجاگر کیا۔

اگلے ہفتے پانچ ریاستوں میں ڈیموکریٹک پارٹی کے پرائمری انتخابات ہو رہے ہیں۔

ہلری کلنٹن نے کلیولینڈ میں ووٹروں سے کہا کہ انہیں ڈیموکریٹک پارٹی کی انتخابی مہم پر فخر ہے جسے وہ اور برنی سینڈرز چلا رہے ہیں۔ ریپبلکن پارٹی کی انتخابی مہم سے موازنہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ریپبلکن امیدوار ایک دوسرے کو نیچا دکھا رہے ہیں۔

ریپبلیکن دوڑ میں بزنس مین ڈونلڈ ٹرمپ مشی گن اور مسیسپی دونوں میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیاب ہوئے جبکہ فلوریڈا کے سینیٹر مارکو روبیو دونوں ریاستوں میں چوتھے نمبر پر تھے۔ ریپبلکن امیدوار آئیڈاہو اور ہوائی میں بھی ایک دوسرے کے مدمقابل تھے۔

عموماً صاف گو اور سخت زبان استعمال کرنے والے ٹرمپ نے خلاف معمول دھیمے انداز میں ووٹروں کا شکریہ ادا کیا مگر انہوں نے ٹیڈ کروز کا مذاق اڑایا جنہوں نے کہا تھا کہ صرف وہی ایسے امیدوار ہیں جو ٹرمپ کو شکست دے سکتے ہیں۔

ریپبلکن رہنماؤں نے ڈونلڈ ٹرمپ کو کامیاب ہونے سے روکنے کے لیے سخت کوششیں شروع کر دی ہیں اور کہا ہے کہ اگر ہلری کلنٹن ڈیموکریٹک پارٹی کی امیدوار ہوئیں تو ڈونلڈ ٹرمپ نومبر میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں ان سے ہار جائیں گے۔

ٹرمپ کے خلاف سات تنظیمیں اگلے ہفتے کے دوران فلوریڈا اور الینوائے میں ان کے خلاف ٹی وی اشتہارات پر ایک کروڑ ڈالر خرچ کریں گی جہاں 15 مارچ کو پرائمری انتخابات ہو رہے ہیں۔

تاہم ٹرمپ نے ان اشتہارات کا جواب سماجی رابطے کی ویب سائیٹ ٹوئیٹر پر دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

ڈیموکریٹک پارٹی میں ہلری کلنٹن اپنے واحد حریف ورمونٹ کے سینیٹر برنی سینڈرز پر واضح برتری رکھتی ہیں۔

سینڈرز نوجوان ووٹروں میں بہت مقبول ہیں اور انہوں نے اپیل کی ہے کہ وہ انتخاب کے دن اپنے گھروں میں نہ بیٹھیں۔

XS
SM
MD
LG