رسائی کے لنکس

logo-print

سعودی عرب میں شیعہ جج کو اغوا کاروں نے ہلاک کر دیا


قطیف میں حکومت کے خلاف شیعہ مسلمانوں کا ایک مظاہرہ، فائل فوٹو۔

سعودی عرب کے سرکاری خبررساں ادارے ایس پی اے نے پیر کے روز اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ ملک کے مشرقی حصے میں اغوا ہونے والے ایک شیعہ جج کو اس کے اغوا کاروں نے ہلاک کر دیا ہے۔

شیخ محمد الجیرانی کو پچھلے سال دسمبر میں قطیف کے علاقے میں ان کے گھر کے قریب سے اغوا کیا گیا تھا۔

قطیف میں تقریباً 10 لاکھ شیعہ مسلمان آباد ہیں۔

نیوز ایجنسی نے کہا ہے کہ 19 دسمبر کو اغوا کاروں اور سیکیورٹی اہل کاروں کے درمیان ہونے والی ایک جھڑپ میں ایک سیکیورٹی اہل کار اور ایک اغوا کار ہلاک ہو گئے تھے، جب کہ دوسرے اغوا کار کو پکڑ لیا گیا۔

رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ جج کی نعش ضلع عوامیہ کے ایک دور افتادہ علاقے سے ملی۔ تاہم یہ نہیں بتایا گیا کہ اسے کب ہلاک کیا گیا تھا۔

حکام نے اس سال کے شروع میں کہا تھا کہ اغوا سے تعلق کے سلسلے میں تین افراد کی تلاش جاری ہےجو ملک کے مشرقی حصے میں دہشت گردی سے منسلک سرگرمیوں میں پہلے سے ہی مطلوب ہیں۔

سعودی عرب کی شیعہ اقلیت کو یہ شکایت ہے کہ سنی مسلم اکثریتی ملک میں ان کے حقوق دبانے جا رہے ہیں اور سیکیورٹی فورسز ان کے خلاف کارروائیاں کرتی رہتی ہیں۔

قطیف کا علاقہ تیل کی دولت سے مالا مال ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG