رسائی کے لنکس

logo-print

سعودی شہزادے کی صدر اوباما اور دیگر اعلیٰ عہدید حکام سے ملاقاتیں


اس ہفتے کے آغاز میں شہزادہ صدر کی قومی اقتصادی کونسل سے ملاقات کر چکا ہے، جس میں خزانہ کے وزیر جیک لیئو شامل ہیں، جس ملاقات میں شہزادہ محمد کے معاشی إصلاحات کے منصوبوں پر گفتگو شامل تھی

سعودی عرب کے نائب ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے جمعہ کو اوول آفس میں صدر براک اوباما سے ملاقات کی۔

تیس سالہ نائب ولی عہد، شاہ سلمان کے بیٹے، ملک کے معاون وزیر اعظم اور وزیر دفاع ہیں۔ اُنھوں نے کئی منصوبے شروع کیے جن کی بدولت سعودی معیشت کو فروغ ملا ہے، جن کا مقصد سنہ 2030 تک تیل کی آمدن پر انحصار میں کمی لانا ہے۔

نوجوان ہونے کے باوجود، شہزداے کو سعودی حکومت میں اہم حیثیت حاصل ہے۔ اسی بنا پر اُن کی اوباما انتظامیہ کے متعدد انتہائی عہدیداروں سے ملاقات ہوئی ہے۔ یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ صدر اوباما نے ولی عہد شہزادے سے اوول آفس میں ملاقات کی، جہاں عام طور پر سربراہان ِ ممالک سے ملاقات کی جاتی ہے۔

وہ کانگریس کے ارکان اور وزیر خارجہ جان کیری سے بھی مل چکے ہیں۔

واشنگٹن میں واقع سعودی سفارت خانے میں اخباری نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے، وزیر خارجہ عدیل الجبیر نے بتایا کہ شہزادہ محمد نے جمعرات کو اپنے امریکی ہم منصب ایش کارٹر سے ملاقات کی۔

اُنھوں نے کہا کہ دونوں نے باہمی تعلقات پر بات چیت کی، ساتھ ہی شام، عراق، یمن، لیبیا اور ایران کی صورت حال پر بھی بات ہوئی۔

جبیر نے بتایا کہ ولی عہد نے شام میں زیادہ ’’قوت کے ساتھ مداخلت‘‘ کی سعودی حمایت کا اعادہ کیا، جس میں مخالفین کو اسلحے کی فراہمی شامل ہے۔

ترجمان نے بتایا کہ جب تک شام میں اقتدار کا توازن ’’ڈرامائی طور پر‘‘ تبدیل نہیں ہوتا، سیاسی عبوری دور کے معاملے کی کوئی حیثیت نہیں ہو گی۔

اس سوال پر کہ 11 ستمبر 2001ء میں امریکہ پر ہونے والے حملوں میں سعودی عرب کے کردار سے متعلق امریکی کلاسی فائڈ دستاویز کے ممکنہ جاری ہونے کے بارے میں اُن کا کیا کہنا ہے، اُنھوں نے کہا کہ سعودی عرب نے سنہ 2002 میں ان دستاویز کو جاری کرنے کے لیے کہا تھا جب امریکہ نے اِنھیں صیغہٴ راز میں رکھنے کا فیصلہ کیا تھا۔

اُنھوں نے کہا کہ اُن کا ملک مبینہ ’’بلینک پجز‘‘ کے بارے میں کوئی ردِ عمل نہیں دکھا سکتا، اور مزید کہا کہ ’’یہ امریکی معاملہ ہے‘‘۔

اس ہفتے کے آغاز میں شہزادہ صدر کی قومی اقتصادی کونسل سے ملاقات کر چکا ہے، جس میں خزانہ کے وزیر جیک لیئو شامل ہیں، جس ملاقات میں شہزادہ محمد کے معاشی إصلاحات کے منصوبوں پر گفتگو شامل تھی۔

XS
SM
MD
LG