رسائی کے لنکس

logo-print

صومالیہ: امریکی ڈرون حملے میں الشباب کا اہم کمانڈر ہلاک


عہدیداروں نے بتایا کہ ڈرون حملے میں مارے جانے والے کمانڈر کا نام حسن علی دوہری تھا اور وہ 'لوگوں کو ہلاک کرنے والی' الشباب کی ایک ٹیم کا سربراہ تھا۔

صومالیہ میں ایک ڈرون حملے میں شدت پسند گروہ الشباب کا ایک سینیئر کمانڈر ہلاک ہو گیا ہے۔

اس کارروائی سے متعلق آگاہ ایک امریکی عہدیدار نے جمعہ کو بتایا کہ بغیر ہوا باز کے امریکی جاسوس طیارے سے کی گئی کارروائی میں یہ شدت پسند مارا گیا۔

صومالیہ میں عہدیداروں نے بتایا کہ ڈرون حملے میں مارے جانے والے کمانڈر کا نام حسن علی دوہری تھا اور وہ 'لوگوں کو ہلاک کرنے والی' الشباب کی ایک ٹیم کا سربراہ تھا۔

صومالیہ کی حکومت کی طرف سے جاری کی گئی گزشتہ سال موغادیشو میں ایک دہشت گرد حملے میں ملوث 12 افراد پر مشتمل الشباب کے انتہائی مطلوب کارکنوں کی فہرست میں حسن علی بھی شامل تھا۔

امریکی وزارت دفاع کے پریس سیکرٹری پیٹر کک نے جمعرات کو اس بات کی تصدیق کی تھی کہ صومالیہ کی فورسز کے تعاون سے امریکہ نے فضائی کارروائی کی ہے۔

اُنھوں نے کہا کہ حسن علی نے ماضی میں ایک ایسے حملے کی بھی قیادت کی جس میں کم از کم تین امریکی شہری ہلاک ہو گئے تھے جب کہ پیٹر کک کے مطابق وہ مشرقی افریقہ کے اس ملک میں امریکی شہریوں پر مزید حملوں کی منصوبہ بندی بھی کر رہا تھا۔

صومالیہ اور پڑوسی ملک کینیا میں حملوں میں ملوث الشباب کے بارے میں خیال کیا جاتا ہے کہ اس تنظیم کا القاعدہ سے تعلق ہے۔

XS
SM
MD
LG