رسائی کے لنکس

logo-print

پاکستان 203 پر آوٹ، جنوبی افریقہ کی بیٹنگ جاری


پاکستان کے حسن علی 59 رنز کے ساتھ نمایاں رہے۔

پاکستان کی طرف سے فاسٹ بالر حسن علی نے سب سے زیادہ 59 رنز اسکور کیے جبکہ کپتان سرفراز احمد نے 41 رنز بنائے کیے۔

پاکستان کے 203 رنز کے جواب میں جنوبی افریقہ کی بیٹنگ جاری ہے اور 43 کے اسکور پر اس کے تین کھلاڑی آوٹ ہو چکے ہیں۔ تینوں وکٹیں شاہین شاہ آفریدی نے حاصل کیں۔ آوٹ ہونے والے بلے بازوں میں ہندرکس، آملہ اور کپتان ڈپلیسی شامل ہیں۔

اس سے پہلے پاکستان کا ٹاپ آرڈر ایک بار پھر ناکام ہوا تاہم حسن علی اور سرفراز احمد کی شاندار شراکت کے باعث پاکستان نے جنوبی افریقا کو جیت کے لئے 204 رنز کا ہدف دیا۔

جنوبی افریقا کے کپتان فاف ڈوپلیسی نے ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کرانے کا فیصلہ کیا، جو درست ثابت ہوا اور پہلے میچ میں عمدہ بیٹنگ کرنے والے پاکستانی اوپنرز اچھا آغاز نہ دے سکے۔

پاکستان کو پہلا نقصان امام الحق کی صورت میں اٹھاناپڑا، وہ 15 کے مجموعی اسکور پر صرف 5 رنز بنا کر ربادا کی گیند پر آؤٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے۔ امام الحق نے پہلے ون ڈے کی جیت میں اہم کردار ادا کیا تھا اور 86رنز کی شاندار اننگز کھیلی تھی۔

اس کے بعد نئے بیٹسمین بابر اعظم بھی زیادہ دیر وکٹ پر نہ ٹھہر سکے اور 12 رنز پر وکٹ گنوا بیٹھے۔

دو ٹاپ آرڈر وکٹیں جلد گرنے کے بعد پاکستان ٹیم دباؤ کا شکار ہوگئی اور نئے آنے والے بیٹسمین بھی پروٹیز بولر کو اعتماد کے ساتھ نہ کھیل سکے اور ایک کے بعد ایک وکٹ کھوتے رہے۔ پہلے ون ڈے میں عمدہ بیٹنگ کرتے ہوئے ناقابل شکست 71 رنز بنانے والے محمد حفیظ بھی بے بس دکھائی دیئے اور 9رنز بناکر پویلین کی راہ لی۔

شاداب خان اور حسین طلعت نے بالترتیب 18اور 2 رنز بنائے۔یوں پاکستان کی آدھی ٹیم صرف 85 رنز پر پویلین لوٹ چکی تھی۔

شعیب ملک 21 اور فہیم اشرف بغیر کھاتہ کھولے آؤٹ ہوئے۔ مستند بیٹسمینوں کے آؤٹ ہونے کے بعد حسن علی نے کپتان سرفراز احمد کے ساتھ اننگز کو آگے بڑھایا اور نویں وکٹ کی شراکت میں برق رفتار 90 رنز بنائے۔ اس دوران حسن علی نے اپنی نصف سنچری مکمل کی، جو ایک روزہ میچوں میں حسن علی کی دوسری نصف سنچری ہے۔

حسن علی نے45گیندوں پر تین چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے دھواں دار 59 رنز بنائے۔ سرفراز احمد 41 رنز بناکر آؤٹ ہوئے، یوں پاکستان کی پوری ٹیم 45 اعشاریہ 5 اوور میں 203 رنز بنا سکی۔

جنوبی افریقا کی جانب سے فیہلو کوایو نے 4، تبریز شمسی نے 3، ربادا نے 2 اور الیویئر نے ایک وکٹ حاصل کی۔

پاکستان اور جنوبی افریقا دونوں نے ٹیم میں دو، دو تبدیلیاں کی ہیں، عثمان شنواری اور عماد وسیم کی جگہ شاہین شاہ آفریدی اور حسین طلعت کو شامل کیا گیا ہے جبکہ پروٹیز نے ڈیوین پریٹوریس اور عمران طاہر کی جگہ ڈین پیٹرسن اور تبریز شمسی کو کھلایا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG