رسائی کے لنکس

ٹلرسن کا دورہٴتھائی لینڈ، تجارت اور علاقائی سلامتی پر بات چیت


وائس آف امریکہ کو جاری کیے گئے ایک بیان میں، امریکی سفارت خانے کے ترجمان نے کہا ہے کہ ’’وزیر خارجہ نے علاقائی سلامتی، تجارت اور سرمایہ کاری، اور دیگر شعبہ جات میں امریکہ تھائی تعاون کے وسیع جہتی امور پر بات کی، جن میں ’آسیاں‘ جیسے علاقائی فورم سمیت دیگر امور شامل ہیں‘‘

امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹِلرسن نے تجارت اور علاقائی سکیورٹی کے معاملات پر مذاکرات کے لیے، تھائی لینڈ کا مختصر دور کیا، جس دوران جوہری اور میزائل تشکیل دینے کے پروگرام پر شمالی کوریا پر دباؤ بڑھانے کے معاملے پر بھی بات چیت ہوئی۔

فلپائن میں، علاقائی سکیورٹی فورم کے دورے کے بعد، ٹِلرسن منگل کے روز بینکاک پہنچے جہاں اُن کی ملاقات وزیر اعظم پریوتھ چان اوچا اور وزیر خارجہ ڈون پریم دونائی سے ہوگی۔ سنہ 2014کے بعد، وہ تھائی لینڈ کا دورہ کرنے والے پہلے اعلیٰ سطحی امریکی اہل کار ہیں۔

وائس آف امریکہ کو جاری کیے گئے ایک بیان میں، امریکی سفارت خانے کے ترجمان نے کہا ہے کہ ’’وزیر خارجہ نے علاقائی سلامتی، تجارت اور سرمایہ کاری، اور دیگر شعبہ جات میں امریکہ تھائی تعاون کے وسیع جہتی امور پر بات کی، جن میں ’آسیاں‘ جیسے علاقائی فورم سمیت دیگر امور شامل ہیں‘‘۔

ترجمان نے کہا کہ ’’اُنھوں نے خطے اور عالمی سطح کے امور پر بات کی، جن میں عوامی جمہوریہٴ کوریا کی جانب سے سکیورٹی کو لاحق خطرات شامل ہیں، اور ساتھ ہی بحیرہٴ جنوبی چین کے معاملات شامل ہیں‘‘۔

علاوہ ازیں، شمالی کوریا کو تنہا کرنے کی غرض سے امریکہ کی وضع کردہ پالیسیوں کی حمایت کا حصول بھی شامل ہے۔ شمالی کوریا نے اقوام متحدہ کی جانب سے عائد کردہ تعزیرات کی خلاف ورزی جاری رکھی ہے۔ ٹلرسن نے اپنے میزبانوں سے تجارتی امور پر بھی گفتگو کی۔

تھائی لینڈ سے وزیر خارجہ ٹلرسن کوالا لمپور جائیں گے، جہاں وہ ملائیشیا کے حکام سے بات چیت کریں گے۔ توقع ہے کہ وہ بدھ کو واشنگٹن لوٹیں گے۔


فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG