رسائی کے لنکس

logo-print

’اوباماکیئر‘ صحت عامہ کی ’’تباہ کُن‘‘ اور’’ناکام‘‘ پالیسی ہے: ٹرمپ


ری پبلیکن پارٹی سے تعلق رکھنے والے صدر نے کہا ہے کہ سیاسی حکمتِ عملی کے طور پر ری پبلیکنز کو چاہیئے کہ اس قانون کو اپنے حال ہی پر چھوڑ دیں، ’’میرے خیال میں بہتر ہوگا‘‘ کہ قانون کی ناکامی کا الزام خود ڈیموکریٹس پر آئے

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے پیر کے روز کہا ہے کہ قومی صحت کی دیکھ بھال کی اصلاحات کا سہرا اُن کے پیش رو، براک اوباما اپنے سر باندھا کرتے تھے، جب کہ اُنھوں نے اِسے ختم کرنے یا متبادل سے متعلق کوئی حکمت عملی تجویز نہیں کی۔

ملک کی ریاستوں کے گورنروں اور انشورنس کمپنیوں کے انتظامی سربراہان کے ساتھ علیحدہ ملاقاتوں کے دوران، ٹرمپ نے سات برس پرانے ’افرڈایبل کیئر ایکٹ‘، جسے عرف عام میں امریکہ میں ’اوباماکیئر‘ کا نام دیا جاتا ہے، کو ’’ناکام و تباہ کُن‘‘ قرار دیا۔


اُنھوں نے دونوں گروپوں سے کہا کہ اس قانون کے تحت، ہیلتھ کیئر انشورنس کی خریداری پر امریکی بہت بوجھ برداشت کر رہے ہیں، جو ’’کسی بھی وقت ناکام ہو کر پھٹ سکتا ہے‘‘۔

ری پبلیکن پارٹی سے تعلق رکھنے والے صدر نے کہا کہ سیاسی حکمتِ عملی کے طور پر ری پبلیکنز کو چاہیئے کہ اسے اپنے حال ہی پر چھوڑ دیں، ’’میرے خیال میں بہتر ہوگا‘‘ کہ قانون کی ناکامی کا الزام خود ڈیموکریٹس پر آئے۔

تاہم، ٹرمپ نے کہا کہ وہ لاکھوں امریکی جنھوں نے اس قانون سے فائدہ اٹھایا ہے، اُن کے لیے، اس کا ختم کیا جانا ’’بہتر نہیں ہوگا‘‘۔

ٹرمپ نے پالیسی میں مجوزہ تبدیلیوں کا ذکر نہیں کیا۔ لیکن، اُنھوں نے کہا کہ بالآخر، ’’نہ صرف (انشورنس) مارکیٹ بہتر ہوگا، بلکہ لوگوں کا بہتر خیال رکھا جائے گا، آسان طریقہٴ کار اپنانے ہوئے‘‘۔

XS
SM
MD
LG