رسائی کے لنکس

logo-print

روس کے سفر میں احتیاط برتنے کا انتباہ


فائل

''دہشت گردی اور ہراساں کیے جانے'' کے ڈر کے پیش نظر، امریکی محکمہ خارجہ نے امریکی شہریوں کو روس کے سفر سے متعلق انتباہ جاری کرتے ہوئے پروگرام پر ''نظرثانی'' کرنے کے لیے کہا ہے۔

سفر کے بارے میں انتباہ ہفتے کو جاری کیا گیا، ایسے میں جب روس ملک بھر کے 11 مقامات پر عالمی کپ کے کھیلوں کی میزبانی کر رہا ہے۔

ہدایت نامے میں کہا گیا ہے کہ ''بڑی سطح کی بین الاقوامی تقریبات، جیسا کہ عالمی کپ، دہشت گردی کے نشانوں کا من پسند ہدف بن سکتی ہیں۔''
بیان میں کہا گیا ہے کہ ''عین ممکن ہے کہ دہشت گرد ایسے مقامات پر حملہ کریں جہاں یہ تقریبات منعقد ہو رہی ہوں، جیسا کہ اسٹیڈیم، شائقین کے لیے مختص مقامات، سیاحوں کی دلچسپی کی جگہیں، حمل و نقل کے مراکز اور دیگر عام مقامات''۔

اس میں کہا گیا ہے کہ ''دہشت گرد ایسے مقامات پر حملہ کرسکتے ہیں جن کے بارے میں معمولی یا کوئی بھی انتباہ جاری نہ کیا گیا ہو۔۔۔ کھلے عام مقامات پر بم حملوں کے خدشات عام ہیں''۔

ہدایت نامے میں مزید کہا گیا ہے کہ ''عمومی طور پر امریکی شہریوں کو ہراساں کیا جا سکتا ہے، بدسلوکی کی جاسکتی ہے، اور قانون کے نفاذ سے وابستہ اور دیگر اہل کاروں کی جانب سے رقوم چھیننے کے واقعات ممکن ہیں''۔

ساتھ ہی، بیان میں کہا گیا ہے کہ ''زیر حراست لیے گئے افراد کو امریکی سفارتی اعانت فراہم کرنے کے کام میں روسی حکام اکثر بغیر جائز وجوہ تاخیری حربے استعمال کرتے ہیں''۔

امریکی محکمہ خارجہ نے کہا ہے کہ روس نے اپنے ملک میں امریکی سفارت کاروں کی تعداد کم کر دی ہے، جس کے باعث امریکی شہریوں کو خدمات کی فراہمی کی امریکی حکومت کی صلاحیت خاصی کم ہو گئی ہے''۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG