رسائی کے لنکس

logo-print

دہشت گردی کا منصوبہ بنانے کے شبے میں نیویارک سے دو افراد گرفتار


دہشت گردی کا منصوبہ بنانے کے شبے میں نیویارک سے دو افراد گرفتار

قانون نافذ کرنے والے امریکی عہدے داروں کا کہناہے کہ انہوں نے دو افراد کو گرفتار کیا ہے جن پر نیویارک شہر میں دہشت گردی کے ایک منصوبے کے لیے ہتھیار خرید خریدنے کی کوشش کا شبہ ہے۔

خبروں میں حکام کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ انہیں بدھ کو دیر گئے ایک پولیس کارروائی کے دوران حراست میں لیا گیا۔ ان کے بارے میں کہا گیا ہے کہ وہ بندوقیں اور ہینڈ گرنیڈ خریدنے کی کوشش کررہے تھے۔

عہدے داروں نے کہا ہے کہ دونوں مشتبہ افراد پر ریاست نیویارک کے دہشت گردی کے قوانین کے تحت مقدمہ چلایا جائے گا۔

گرفتار کیے جانے والے افراد میں سے ایک کے بارے میں کہاگیا ہے کہ اس کا تعلق شمالی افریقہ سے ہے۔

نیویارک کے محکمہ پولیس کا انٹیلی جنس ڈویژن ان افراد کی نگرانی کررہاتھا۔ خبروں میں عہدے داروں کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ فیڈرل بیورو آف انوسٹی گیشن نے اس کارروائی میں شریک نہیں ہوگا۔

پاکستان کے شہر ایبٹ آباد میں امریکی کمانڈوز کے خفیہ آپریشن میں اسامہ بن لادن کی ہلاک کے بعد سے نیویار ک کے حکام کسی بھی خطرے کے مقابلے کے لیے انتہائی الرٹ ہیں۔

تقریباً دس سال قبل گیارہ ستمبر2011ء میں ایک دہشت گرد حملے میں نیویارک میں واقع ورلڈ ٹریڈ سینٹر کی دو بلند وبالا عمارتیں ملبے کا ڈھیر بن گئی تھیں۔ یہ حملہ دو مسافر طیاروں کو اغوا کرنے کے بعد عمارت سے ٹکرا کرکیا گیاتھا، جن میں تقریباً تین ہزار افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

XS
SM
MD
LG