رسائی کے لنکس

logo-print

احمدی نژاد کے قریبی ساتھی بدعنوانی کے الزام میں گرفتار


احمدی نژاد کے قریبی ساتھی بدعنوانی کے الزام میں گرفتار

ایران کے ذرائع ابلاغ نے خبر دی ہے کہ حکام نے صدر محمود احمدی نژاد کے قریبی ساتھی سمجھے جانے والے سابق نائب وزیرِخارجہ کو بدعنوانی کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق محمد شریف ملک زادہ کو جمعرات کے روز حراست میں لیا گیا۔ ملک زادہ نے رواں ہفتے اپنی تقرری کےمحض تین دن بعد ہی وزارت سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

نائب وزیرِخارجہ کے استعفیٰ کی بنیادی وجہ ان کی تقرری پر صدر احمدی نژاد اور قدامت پسندوں کے مابین پیدا ہونے والا تنازعہ تھا جس کے باعث وزیرِخارجہ علی اکبر صالحی کو پارلیمان میں مواخذہ کا سامنا کرنا پڑرہا تھا۔

ملک زادہ پر مالی بدعنوانیوں کے الزامات تھے اور ایرانی پارلیمان کے ارکان نے خبردار کیا تھا کہ اگر ان کی تقرری منسوخ نہ کی گئی تو ایرانی وزیرِخارجہ کو عہدے سے ہٹا دیا جائے گا۔

واضح رہے کہ صدر احمدی نژاد اور ایرانی علماء اور قدامت پسندوں کے مابین ایران کے مستقبل کی حکمتِ عملی سے متعلق گزشتہ کئی ماہ سے تنازعہ چلا آرہا ہے۔

اپنے استعفیٰ میں ڈپٹی وزیرِخارجہ نے تحریر کیا تھا کہ وہ اپنے مخالفین کی جانب سے "ناجائز الزامات اور حد سے زیادہ نا انصافی" کے مزید متحمل نہیں ہوسکتے۔

XS
SM
MD
LG