رسائی کے لنکس

logo-print

جو بائیڈن کی حلف برداری کے دوران پریڈ کی تقریب آن لائن ہو گی


منتخب صدر جو بائیڈن سن 2009 میں نائب صدر کے عہدے کا حلف اٹھا رہے ہیں۔ ان کی اہلیہ جل بائیڈن ان کے ہمراہ ہیں۔ 20 جنوری 2009

منتخب صدر جو بائیڈن کی حلف برداری کی تقریب کے منتظمین نے اتوار کے روز اعلان کیا ہے کہ حلف برداری کی تقریب کے دوران امریکہ بھر میں پریڈز منعقد کی جائیں گی جن میں ہجوم کی تعداد پر پابندیاں ہوں گی اور یہ آن لائن ٹیلی کاسٹ کی جائیں گی۔

20 جنوری کی حلف برداری کے بعد منتخب صدر جو بائیڈن اپنی اہلیہ جل بائیڈن اور منتخب نائب صدر کاملا ہیرس اور ان کے شوہر ڈگ ایم ہاف سماجی دوری کا خیال رکھتے ہوئے ملٹری پریڈ کا معائنہ کریں گے۔ یہ پریڈ فوجی روایات پر مبنی ہے، جس میں بائیڈن فوج کی تیاری کا جائزہ لیں گے۔

بائیڈن کو واشنگٹن ڈی سی کی 15 ویں سٹریٹ سے صدارتی دستہ وائٹ ہاؤس تک لے جائے گا، جس میں فوج کی ہر شاخ کے نمائندے شرکت کریں گے۔ حلف برداری تقریب کے منتظمین کے مطابق یہ تقریب بھی سماجی دوری کے اصولوں پر عمل کرتے ہوئے منعقد ہو گی۔

ان کے بقول “امریکی عوام اور دنیا تک منتخب صدر کے وائٹ ہاؤس تک پہنچنے کے تاریخی عمل کو پہنچایا جائے گا لیکن بڑے ہجوم سے پرہیز کیا جائے گا۔”

وائٹ ہاؤس کے باہر پریڈ کے معائنے کے سٹینڈ کو ورکرز نے ہٹانا شروع کر دیا ہے کیونکہ منتظمین اس تقریب کو زیادہ سے زیادہ ورچوئل رکھنا چاہتے ہیں۔ اسی لیے منتظمین نے کہا ہے کہ تقریب کے دوران پریڈ بھی امریکہ بھر میں ورچوئل ہو گی، جس میں ملک بھر کی ریاستوں اور خطوں کے رنگا رنگی، ورثہ، اور مشکل حالات سے نمٹنے کی اہلیت کو واضح کیا جائے گا۔

پریڈ براہ راست دکھائی جائے گی اور اس میں “رنگا رنگ اور کل جہتی” برادریوں کی پرفارمنسز ہوں گی۔ منتظمین تقریب کے شرکا کا اعلان جلد کریں گے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG