رسائی کے لنکس

’جے ایف 17 تھنڈر‘ طیاروں سے لیس نئے ملٹی رول اسکواڈرن کا قیام


سمنگلی، کوئٹہ

ائیر چیف مارشل سہیل امان نے کہا کہ ہم ایک امن پسند قوم ہیں اور نہیں چاہتے کہ کوئی ہماری فضائی حدود کی خلاف ورزی کرے

پاک فضائیہ نے ’جے ایف 17 تھنڈر‘ طیاروں سے لیس ایک نئے ملٹی رول سکواڈرن کا قیام عمل میں لایا ہے جسے ’نمبر 28 ملٹی رول سکواڈرن‘ کا نام دیا گیا ہے۔

اس سلسلے میں ’پی اے ایف‘ بیس، سمنگلی، کوئٹہ میں ایک تقریب منعقد کی گئی جس میں پاک فضائیہ کے سربراہ ائیر چیف مارشل سہیل امان مہمان خصوصی تھے۔

ائیر چیف مارشل سہیل امان نے سکواڈرن کے آفیسر کمانڈنگ ونگ کمانڈر عامر عمران چیمہ کو سکواڈرن کا نشان دیا۔ اس موقع پر چار جے ایف 17تھنڈر طیاروں کی فارمیشن نے فلائی پاسٹ کا مظاہرہ بھی پیش کیا۔

پاک فضائیہ کے سربراہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں پاکستان کے دشمنوں کی سازشوں کا بخوبی ادراک ہے۔ لیکن، ہمارا عزم غیر متزلزل ہے اور مقصد بالکل واضح ہے۔

ائیر چیف مارشل سہیل امان نے کہا کہ ’’ہم ایک امن پسند قوم ہیں اور نہیں چاہتے کہ کوئی ہماری فضائی حدود کی خلاف ورزی کرے۔ ہم نے دہشت گردی کے ناسور کو جڑ سے اکھاڑنے کے لیے ہر ممکن کوشش کی ہے۔ اور، ہماری جدوجہد کے صلے میں ملک میں امن کی بحالی ممکن ہوئی ہے‘‘۔

ائیر چیف نے کہا کہ جے ایف 17 تھنڈر طیاروں سے لیس نمبر 28 ملٹی رول سکواڈرن کی ذمہ داری ہے کہ پاکستان کی مغربی سرحدوں کی فضائی حدود کی دن رات نگرانی کرے۔ ’’مجھے یقین ہے کہ نمبر 28 سکواڈرن طاقت کے توازن کے حوالے سے یہ ذمہ داری بخوبی سر انجا م دے گا‘‘۔

ائیرچیف کا کہنا تھا کہ ’’ہم کسی بھی فضائی خلاف ورزی کی صور ت میں اس کا دفاع کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتے ہیں‘‘۔

پاک چین اشتراک سے تیار کردہ جے ایف 17 تھنڈر طیارہ پاک فضائیہ میں باضابطہ شامل کیا جاچکا ہے اور اس سے پہلے بھی ایک اسکوارڈن کام کر رہا ہے۔ اس جہاز کی فروخت کے لیے پاکستان بین الاقوامی منڈیوں میں بھی گاہکوں کی تلاش میں ہے۔ لیکن، تاحال اس جہاز کو بین الاقوامی سطح پر فروخت نہیں کیا جا سکا۔ البتہ، پاک فضائیہ کے پرانے جہازوں کو تبدیل کرنے کا عمل جاری ہے اور پاک فضائیہ میں استعمال ہونے 1960 کی دہائی کے جہازوں کو متروک قرار دیکر انہیں جدید جے ایف 17 تھنڈر طیاروں سے تبدیل کیا جارہا ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG