رسائی کے لنکس

logo-print

ساحل کے اغوا کے سلسلے میں سپین سے پانچ افراد گرفتار


ساحل کی ماں عقیلہ نقاش اپنے بیٹے کی تصویر دکھا رہی ہے

سپین کی پولیس نے پاکستان میں ایک پانچ سالہ برطانوی لڑکے کے اِغوا کے سلسلے میں پانچ افراد کو گرفتار کرلیا ہے,اور تاوان کی کم سے کم ایک لاکھ 20ہزار ڈالر کی رقم بھی بازیاب کرلی ہے۔

حکام نے کہا ہے کہ پولیس نے دو پاکستانی مَردوں اور رومانیہ کی ایک عورت کو منگل کے روز شمال مشرقی سپین کے شہر تارا گونا کے قریب کونسٹانٹی نامی قصبے میں گرفتار کیا تھا۔ ان میں سے دو نے پیرس میں تاوان کی رقم وصول کی تھی۔

باقی دو افراد کو پیرس میں گرفتار کیا گیا ہے اور بتایا گیا ہے کہ وہ اُن مشتبہ افراد کے رشتے دار ہیں، جنہیں سپین میں پکڑا گیا ہے۔ توقع ہے کہ جمعرات کے روز سپین کی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

ساحل سعید نامی برطانوی لڑکے کو منگل کے روز رہا کردیا گیا تھا۔ اُسے تقریباً دو ہفتے پہلے وسطی پاکستان میں اُس کے دادا اور دادی کے گھر سے وہ ڈاکو اُٹھا کر لے گئے تھے، جنہوں نے ڈاکے کے دوران گھر کے باقی لوگوں کو بندوقیں تان کر بے بس کیے رکھا تھا۔

حکام کا کہنا ہے کہ اُنہیں شبہ ہے کہ اِغوا کے واقعے میں ساحل کے خاندان کے افراد ملوّث ہوسکتے ہیں۔

XS
SM
MD
LG