رسائی کے لنکس

صدر ٹرمپ دو روزہ دورے پر فرانس پہنچ گئے


پیرس پہنچنے کے فوراً بعد صدر ٹرمپ ہوائی اڈے سے امریکی سفیر کی رہائش گاہ پہنچے جہاں انہوں نے یورپ میں تعینات امریکی فوجی دستوں کے افسران کے ساتھ ظہرانے پر ملاقات کی۔

امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ فرانس کے دو روزہ دورے پر پیرس پہنچ گئے ہیں جہاں وہ اپنے فرانسیسی ہم منصب ایمانیول میخوان سے دو طرفہ تعلقات اور عالمی مسائل پر تبادلۂ خیال کریں گے۔

صدر ٹرمپ ایک ایسے وقت میں فرانس کا دورہ کر رہے ہیں جب امریکہ میں اس انکشاف پر خاصی لے دے ہورہی ہے کہ ان کے صاحب زادے نے صدارتی انتخاب کے دوران اپنے والد کی ڈیموکریٹ حریف ہیلری کلنٹن کے خلاف روس کے بعض افراد کی مدد لی تھی۔

اپنے قیام کے دوران صدر ٹرمپ جمعے کو فرانس کے قومی دن 'باسٹیل ڈے' کے موقع پر ہونے والی فوجی پریڈ اور جنگِ عظیم اول میں امریکی فوج کی شمولیت کے 100 سال مکمل ہونے سے متعلق تقریبات میں شریک ہوں گے۔

جمعرات کو پیرس پہنچنے کے فوراً بعد صدر ٹرمپ ہوائی اڈے سے امریکی سفیر کی رہائش گاہ پہنچے جہاں انہوں نے یورپ میں تعینات امریکی فوجی دستوں کے افسران کے ساتھ ظہرانے پر ملاقات کی۔

بعد ازاں صدر ٹرمپ پیرس کے تاریخی ہوٹل دان ولیدز جائیں گے جہاں ان کی فرانسیسی صدر سے ملاقات ہونی ہے۔

ملاقات کے بعد دونوں رہنما اپنی بیگمات کے ہمراہ پیرس کے معروف 'ایفل ٹاور' کی دوسری منزل پر قائم ایک ہوٹل میں کھانا کھائیں گے۔

وہائٹ ہاؤس کے ایک اعلیٰ عہدیدار کے مطابق اپنے دورے کے دوران امریکی صدر اپنے فرانسیسی ہم منصب کے ساتھ شام میں جاری بحران اور مشرقِ وسطیٰ میں انسدادِ دہشت گردی کی کوششوں پر بھی تبادلۂ خیال کریں گے۔

فرانس کے صدارتی محل 'ایلزے پیلس' کے مطابق دونوں رہنماؤں کے درمیان ملاقات میں صدر میخوان صدر ٹرمپ سے مغربی افریقی ممالک میں داعش کے مقابلے کے لیے مزید وسائل فراہم کرنے کا مطالبہ کریں گے جہاں فرانس اپنی فوجی موجودگی کو کم کرنا چاہتا ہے۔

صدر ٹرمپ کی جانب سے ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے کے لیے کیے جانے والے عالمی معاہدے سے امریکہ کی دستبرداری اور تجارتی معاملات میں "سب سے پہلے امریکہ" کی پالیسی اپنانے پر بیشتر یورپی رہنما امریکی صدر سے نالاں ہیں۔

ایسے میں صدر ٹرمپ کے فرانس کے دورے کو خاصی اہمیت دی جارہی ہے جس کے دوران فرانسیسی حکام کے مطابق صدر میخواں کی کوشش ہوگی کہ امریکی صدر کو اہم بین الاقوامی مسائل پر یورپی رہنماؤں کے موقف سے آگاہ کیا جاسکے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG