رسائی کے لنکس

میموریل ڈے: سابقہ فوجیوں کی بیش بہا خدمات اجاگر کرنے کا دِن


امریکی سربراہ کی حیثیت سے پہلی میموریل ڈے تقریب میں شرکت کرتے ہوئے، صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے واشنگٹن سے کچھ ہی دور واقع ’آرلنگٹن نیشنل سیمیٹری‘ میں نامعلوم سپاہی کی قبر پر پھولوں کی چادر چڑھائی

پیر کے روز امریکہ میں ’میموریل ڈے‘ منایا جا رہا ہے۔ تاہم، غیر سرکاری طور پر متعدد امریکی اِس دِن کو موسمِ گرما کا باضابطہ آغاز خیال کرتے ہیں۔

امریکی سربراہ کی حیثیت سے پہلی میموریل ڈے تقریب میں شرکت کرتے ہوئے، صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے واشنگٹن سے کچھ ہی دور واقع ’آرلنگٹن نیشنل سیمیٹری‘ میں نامعلوم سپاہی کی قبر پر پھولوں کی چادر چڑھائی۔
ٹرمپ نے کہا کہ ’’ہم اپنے بہترین مرد و خواتین کو عزت سے یاد کرتے ہیں، جنھوں نے کامیابی اور آزادی کے لیے عظیم ترین قربانی پیش کی۔ اُنھوں نے یہ قربانی تشہیر، پیسے یا ذاتی وقار کی خاطر نہیں دی، بلکہ ملک کے لیے دی ہے‘‘۔

ٹرمپ نے کہا کہ ’’ملک کے لیے جان دینے والے جَرّی سپاہی نے لڑائی میں جان دی، تاکہ ہم امن میں زندگی گزار سکیں‘‘۔

اُنھوں نے جنگ میں جان نثار کرنے والوں کے رشتہ داروں سے کہا کہ ’’ہمیں آپ کے دکھ کا درست اندازہ نہیں، جس بات کا ہمیں بخوبی علم ہے وہ یہ کہ ہم اُن کے اور آپ کے انتہائی مشکور ہیں، جو احساس قائم و دائم رہے گا‘‘۔

سرکاری طور پر، ’میموریل ڈے‘ مئی کے آخری پیر کو منایا جاتا ہے، جس دِن امریکی تاریخ میں فوجی خدمات بجا لانے والے جان نثاروں کو خراج عقیدت پیش کیا جاتا ہے۔ کانگریس نے سنہ 1971 میں ’میموریل ڈے‘ کو ایک وفاقی یومِ تعطیل قرار دیا تھا۔

آج کے دِن ملک بھر کی طرح واشنگٹن میں بھی خصوصی تقریبات کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔

ہر سال کی طرح، ’رولنگ تھنڈر‘ جنگِ عظیم دوئم کی یادگار اور ’ویتنام ویٹرنز میمورئل‘ پر پھولوں کے گلدستے پیش کیے۔ ’رولنگ تھنڈر‘ کے شرکاٴ موٹرسائیکلوں پر سوار ہوتے ہیں اور جنگی قیدیوں کے حالات سے آگہی اور دفاعی خدمات دیتے ہوئے لاپتا ہونے والوں کی یاد میں خراج عقیدت پیش کرتے ہیں۔

’ویٹرنز فور پیس‘ تنظیم واشنگٹن میں متعدد تقاریب منعقد کر رہی ہیں۔ بقول اُس کے، ’’صدر ٹرمپ کی بجٹ تجاویز غیر معمولی نوعیت کی ہیں، جس میں پینٹاگان کی رقوم میں 54 ارب ڈالر کا اضافہ کیا گیا ہے‘‘۔

’میموریل ڈے‘ کا آغاز 1865ء میں ’خانہ جنگی‘ کے خاتمے پر ہوا، جب سابقہ غلاموں کے ایک گروپ نے ملکی جنگوں میں ہلاک ہونے والوں کی پہلی بار یاد منائی۔

گروپ نے ساؤتھ کیرولینا کے شہر چارلسٹن میں ایک وفاقی قید خانے کے کیمپ کی ایک اجتماعی قبر سے 250 سے زائد یونین کے فوجیوں کی لاشیں نکال کر اُن کی باضابطہ تدفین کی رسم ادا کی۔

پچاس سے زائد برسوں تک، تعطیل کے دِن لوگوں نے اُن کی یاد منائی جو خانہ جنگی میں ہلاک ہوئے، نا کہ دیگر امریکی تنازعات میں جانیں دینے والوں کے۔

لیکن، جب امریکہ جنگ عظیم یکم میں داخل ہوا، اِس روایت کو توسیع دے کر اِس میں تمام لڑائیوں میں ہلاک ہونے والوں کی یاد کو شامل کیا گیا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG