رسائی کے لنکس

جنوبی افریقہ میں کرونا پر کنٹرول کے لیے عالمی ادارۂ صحت کی مدد


جنوبی افریقہ میں ایک رضاکار پر کرونا وائرس سے بچاؤ کی تجرباتی ویکیسن دی جا رہی ہے۔

عالمی ادارہ صحت کے ماہرین پر مشتمل ایک گروپ اس وقت جنوبی افریقہ میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کی کوششوں میں مدد کر رہا ہے۔

حالیہ ہفتوں میں جنوبی افریقہ میں کوویڈ 19 کے کیسز میں تیزی سےاضافہ ہوا ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق جنوبی افریقہ میں کورونا وائرس کے پانچ لاکھ اور 30 ہزار کیسز سامنے آ چکے ہیں۔ جس کے بعد جنوبی افریقہ کوویڈ 19 کے متاثرین کی تعداد کے لحاظ سے دنیا میں پانچویں نمبر پر ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے 43 رکنی وفد میں موذی امراض کی روک تھام، صحت عامہ، امراض سے بچاؤ اور اس پر قابو پانے کے ماہرین شامل ہیں جو کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کی کوششوں میں مدد فراہم کریں گے۔

عالمی ادارہ صحت کی ٹیم اپنا کام شروع کرنے سے پہلے جنوبی افریقہ کے صحت کے ادارے ک تحت روک تھام کی اب تک کی کارروائیوں کا جائزہ لے گی۔

اس کے بعد ڈبلیو ایچ او کے ماہرین ملک کے سب سے متاثرہ علاقوں یعنی مشرقی کیپ، فری سٹیٹ، گاؤٹنگ، کوازولو نیٹل اور پوما لنگا میں امدادی خدمات کو مستحکم اور بہتر بنانے میں مدد دے گی۔

جنوبی افریقہ کے حکام نے تصدیق کی ہے کہ ملک میں اب تک اس موذی مرض سے 92 ہزار افراد اپنی زندگیوں سے محروم ہو چکے ہیں۔

جنوبی افریقہ کے وزیر صحت ڈاکٹر زویلینی خیزی نے بتایا ہے کہ اب گاؤٹنگ، مغربی کیپ اور مشرقی کیپ میں اس مرض کے کیسز میں کمی آنا شروع ہو گئی ہے، لیکن ابھی یہ نہیں کہا جا سکتا کہ یہ وبا ان علاقوں میں اپنے نقطہ عروج پر پہنچ چکی ہے یا نہیں۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG