رسائی کے لنکس

وفا کی ایک اور مثال: کتا کئی دن تک زیر علاج مالک کا اسپتال کے باہر انتظار کرتا رہا


بنجوک اس وقت سے اسپتال کے باہر موجود تھا جب اس کے مالک کو ایمبولینس میں اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔ کتا ایمبولینس کے ساتھ ساتھ اسپتال تک آیا تھا۔

ترکی میں ایک وفادار کتا کئی روز تک اسپتال کے باہر اپنے مالک کا انتظار کرتا رہا جو کرونا وائرس کا شکار ہونے کے بعد اسپتال میں زیرِ علاج تھا۔

مذکورہ کتے کو بنجوک کے نام سے پکارا جاتا ہے جس کے معنی مالا کے موتی کے ہیں۔

بنجوک اُس وقت سے اسپتال کے باہر موجود تھا جب اس کے مالک کو بحیرہ اسود کے شہر طرابزون کے ایک اسپتال میں داخل کرنے کے لیے ایمبولینس میں منتقل کیا گیا۔

کتا ایمبولینس کے ساتھ ساتھ اسپتال تک آیا اور وہیں اسپتال کے باہر اپنے مالک کا انتظار کرتا رہا۔

ترکی کے مقامی خبر رساں ادارے 'ڈی ایچ اے' کی رپورٹ کے مطابق 14 جنوری کو کمال ترک نامی مریض کو کرونا کے علاج کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا جس کے بعد سے یہ کتا وہیں اسپتال کے باہر کھڑا رہا۔

اسپتال میں زیرِ علاج کتے کے مالک کی بیٹی اینر ایگیلی کا کہنا تھا کہ وہ بنجوک کو ساتھ گھر لے جاتی تھیں لیکن یہ پھر اسپتال پہنچ جاتا ہے۔

اسپتال کی سیکیورٹی پر مامور محافظ محمد اکدینز نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ یہ کتا روزانہ صبح نو بجے اسپتال کے باہر پہنچ جاتا تھا اور رات تک یہاں موجود رہتا تھا۔ البتہ اس نے کبھی اسپتال کے اندر داخل ہونے کی کوشش نہیں کی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جب بھی اسپتال کے شیشوں کا خود کار مرکزی دروازہ کھلتا تو یہ کتا سر اندر کر کے اسپتال کے اندر جھانکنے کی کوشش کرتا تھا۔

بدھ کو کمال سین ترک کو اسپتال کے باہر لایا گیا تاکہ وہ اپنے اس وفادار کتے سے مل سکیں۔ کمال ترک کی وہیل چیئر جب اسپتال سے باہر لائی گئی تو کتے نے خوشی سے اس کے گرد چکر لگائے اور اپنے مالک کے پیروں میں کھیلنے لگا۔

بنجوک کے حوالے سے کمال ترک کا کہنا تھا کہ "اس نے مجھے بہت یاد کیا ہے جب کہ مجھے بھی اس کی شدت سے یاد آئی۔"

کمال ترک کو بعد ازاں اسپتال سے فارغ کر دیا گیا تھا اور وہ بنجوک کے ہمراہ گھر منتقل ہو گئے ہیں۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG