رسائی کے لنکس

logo-print

ایک سے زیادہ فون لانے پر ایئرپورٹ پر ہی مزید ٹیکس ادا کرنا ہوگا


فائل

بیرونِ ملک سے پاکستان آنے والے پاکستانیوں کو اب اپنے ذاتی استعمال کے ایک موبائل فون کے علاوہ زائد فون لانے پر ایئرپورٹ پر ہی مزید ٹیکس ادا کرنا ہوگا، اس سے بیرون ملک مقیم پاکستانی تشویش کا شکار ہیں جو اپنے اہل خاندان اور عزیز و اقارب کے لیے مہنگے موبائل فون تحفتاً لے کر آتے تھے۔

اس معاملے کا آغاز اس وقت ہوا جب سماجی رابطے کی ویب سائیٹ ٹوئیٹر پر ایک صارف نے ایک تصویر پوسٹ کی جس میں ان کو ایئرپورٹ پر ’سام سنگ جے سکس‘ موبائل، جس کی قیمت 26 ہزار روپے تھی، ملک میں لانے کے لیے 10 ہزار روپے ٹیکس دینا پڑا۔ اس کے ساتھ ایک فہرست بھی موجود تھی جس میں مختلف موبائل فونز کے ماڈلز کے ساتھ ان کی قیمت کا اندراج تھا اور مختلف ماڈلز کے لیے مختلف ٹیکس وصول کیا جانے کا کہا گیا تھا۔

اس معاملے پر سوشل میڈیا میں بحث کے بعد وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے ٹوئیٹر پر اس کی تصدیق کی اور کہا کہ اوورسیز پاکستانی موبائل فون لا سکتے ہیں۔ اضافی فون پر ٹیکس واجب الادا ہے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ سالانہ دو ارب ڈالر کے موبائل درآمد کر رہے ہیں اس پر ٹیکس وصول نہیں کریں گے تو ملک کا نظام کیسے چلے گا۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ 60 ڈالر سے کم قیمت کے فون پر ٹیکس نہ ہونے کے برابر ہے مہنگے فون پر 38% ٹیکس ہےاس سے زیادہ مناسب ٹیکسیشن کیا ہو گی۔ ٹیکس کلچر اپنانا ہو گا۔

اس ٹوئیٹ کے بعد سوشل میڈیا پر دوبارہ ایک بحث کا آغاز ہوگیا جس میں تحریک انصاف حکومت کے اس اقدام کی مذمت کی جارہی ہے، بہت سے افراد کا کہنا ہے کہ جو لوگ ملک میں بطور تحفہ موبائل فون سیٹ لیکر جا رہے ہیں ان کے ساتھ یہ اضافی ٹیکس عائد کرنا زیادتی ہوگی۔ ایک صارف زوبی نے تو یہاں تک لکھ دیا کہ وہ اپنے گھر والوں کو بینکنگ چینل سے رقم بھیجتے۔ لیکن اب ہنڈی کے ذریعے بھیجیں گے۔ اگر حکومت کو اوورسیز پاکستانیوں کا خیال نہیں تو ہمیں بھی نہیں ہے۔

ایک صارف نے کہا کہ بیرون ملک عام پاکستانیوں کے پاس دو موبائل فون ہوتے ہیں اب وہ ایک سیٹ پھینک دیں کیا؟ عام استعمال کے فون پر ٹیکس کیوں۔

فواد چوہدری کے ٹوئیٹ کے بعد تعریف اور تنقید کا سلسلہ جاری ہے۔ تاہم، بیرون ملک مقیم پاکستانیوں نے ٹیکس جمع کرنے کی اس حکمت عملی پر اعتراض کیا ہے کہ ان کے ایک سے زیادہ موبائل فون پر اس قدر زیادہ ٹیکس لیا جارہا ہے۔

پاکستان میں اس وقت پاکستانی ٹیلی کمیونکیشن اتھارٹی نے نیا سسٹم لگانے کا بھی اعلان کیا ہے کے بعد چوری شدہ یا اسمگل شدہ موبائل فون کی آئی ایم ای آئی شناخت کو بلاک کر دیا جائے گا۔ اس نظام کے نفاذ کے ساتھ ہی حکومت نے بیرون ملک سے آنے والے موبائل فونز پر بھی بھاری ٹیکس عائد کرنا شروع کردیے ہیں۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG