رسائی کے لنکس

logo-print

آسمانی بجلی چمکنے کا نیا عالمی ریکارڈ


میکسیکو سٹی میں آسمانی بجلی چمکنے کا ایک منظر، 22 جون 2020

اقوام متحدہ کے موسمیات کے ادارے ڈبلیو ایم او نے کہا ہے کہ انہیں جنوبی امریکہ میں بڑے پیمانے پر آسمانی بجلی چمکنے کے واقعات کی تصدیق ہوئی ہے۔ بجلی چمکنے کے یہ دونوں واقعات اپنی لمبائی اور دورانیے کے لحاظ سے ایک نیا ریکارڈ ہیں۔

ڈبلیو ایم او نے جمعے کے روز بتایا کہ موسم اور آب و ہوا کے شدید حالات سے متعلق کمیٹی نے بجلی چمکنے کے ان دونوں واقعات کی تصدیق کے لیے سیٹلائٹ ٹیکنالوجی استعمال کی۔

اس سلسلے کا پہلا واقعہ جنوبی برازیل میں 31 اکتوبر 2018 میں رونما ہوا۔ اس میں آسمانی بجلی کے کوندے کی لمبائی 709 کلومیٹر تھی۔

ڈبلیو ایم او کا کہنا ہے کہ طویل دورانیے تک آسمانی بجلی چمکنے کا ریکارڈ 4 مارچ 2019 کو قائم ہوا۔ آسمانی بجلی کا یہ کوندا شمالی ارجنٹائن کے آسمان پر 16 اعشاریہ 73 سیکنڈز تک دیکھا گیا۔

موسمیات کے عالمی ادارے نے کہا ہے کہ آسمانی بجلی کے کوندے کی لمبائی اور دورانیے کے یہ دونوں ریکارڈ ماضی کے ریکارڈ سے دگنے سے بھی زیادہ ہیں۔

اس سے قبل یہ ریکارڈ امریکی ریاست اوکلاہاما اور فرانس میں قائم ہوئے تھے۔

ڈبلیو ایم او، عالمی، نصف کرہ ارض اور علاقائی سطح پر موسموں کی شدید صورت حال کے ریکارڈ بھی مرتب کرتا ہے۔ کمیٹی سے منسلک پروفیسر رینڈل کروینی نے ان دونوں ریکارڈوں کو بجلی چمکنے کے حوالے سے غیر معمولی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ فطرت میں کچھ بھی ہو سکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ آسمانی بجلی کے مطالعے کے سلسلے میں یہ دونوں ریکارڈ ایک اہم بنیاد فراہم کرتے ہیں۔

ڈبلیو ایم او نے آسمانی بجلی سے آگہی کے عالمی دن یعنی 28 جون سے پہلے یہ ریکارڈ جاری کیے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ آسمانی بجلی ہر سال کئی جانیں لے لیتی ہے اور یہ عوامی زندگی کے تحفظ کے معمولات بھی اثرانداز ہوتی ہے۔

موسمیات کے عالمی ادارے کا کہنا ہے کہ آسمانی بجلی سے بچاؤ کا سادہ اصول یہ ہے کہ اگر بجلی چمکنے اور اس کی گرج سنائی دینے کے درمیان 30 سیکنڈ کا وقفہ ہو، تو یہ صورت حال خطرے کی نشاندہی کرتی ہے۔ اگر ایسا ہو تو آپ عمارت کے اندر چلے جائیں اور آخری بار بجلی چمکنے کے وقت کے بعد سے کم از کم 30 منٹ تک اندر ہی رہیں۔ اور پھر اس کے بعد اپنے معمولات شروع کریں۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG