رسائی کے لنکس

نیو یارک: عدالت میں سیفولو سیپوف کے خلاف 22 الزامات عائد


فائل

امریکی محکمہٴ انصاف نے بتایا ہے کہ منگل کے روز مین ہٹن کی ایک وفاقی عدالت میں سیپوف کے خلاف فردِ جرم عائد کی گئی۔ اُن پر قتل کے آٹھ الزامات، اقدام قتل کے 12 الزامات، داعش کو مادی مدد فراہم کرنے کی کوشش اور تشدد اور موٹر گاڑیوں کا تباہ کیا جانا، جن کے نتیجے میں ہلاکتیں واقع ہوئیں

وفاقی گرینڈ جیوری نے سیفولو سیپوف کے خلاف 22 الزامات پر مشتمل فردِ جرم کی تفصیل پیش کی ہے، جن پر نیو یارک سٹی میں سائیکل کے راستے پر ٹرک چڑھا کر حملہ کرنے کا الزام ہے، جس میں آٹھ افراد ہلاک ہوئے تھے۔

امریکی محکمہٴ انصاف نے بتایا ہے کہ منگل کے روز مین ہٹن کی ایک وفاقی عدالت میں سیپوف کے خلاف فردِ جرم عائد کی گئی۔

اُن پر قتل کے آٹھ الزامات، اقدام قتل کے 12 الزامات، داعش کو مادی مدد فراہم کرنے کی کوشش اور تشدد اور موٹر گاڑیوں کا تباہ کیا جانا، جن کے نتیجے میں ہلاکتیں واقع ہوئیں۔

سیپوف کو، جو ازبک تارکِ وطن ہے، ایک پولیس اہل کار نے گولی ماری تھی، جس کے بعد ملزم کو اسپتال داخل کر دیا گیا تھا۔

اکتیس اکتوبر کی دوپہر سائیکل کے مصروف راستے پر موٹر گاڑی کی مدد سے حملے میں متعدد افراد کو نقصان پہنچانے کے الزام میں اُنھیں گرفتار کیا گیا تھا۔

نیو یارک کے جنوبی ضلعے کے قائم مقام اٹارنی، جون ایچ کِم نے کہا ہے کہ ’’مین ہٹن کے مغربی علاقے میں، سورج کی روشنی میں، نفرت اور بگڑے ہوئے نظریے کے غلبے کے شکار، سیفولو سیپوف پیدل چلنے والوں اور سائیکل سواروں کے راستے میں گھس آیا اور آٹھ بے گناہ افراد کو ہلاک کیا اور کم از کم ایک درجن کو زخمی کیا‘‘۔

داعش نے اس ٹرک حملے کی ذمہ داری قبول کی تھی، جو 11 ستمبر 2001ء کے بعد نیو یارک سٹی میں ہونے والا مہلک ترین حملہ بتایا جاتا ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG