رسائی کے لنکس

logo-print

گیلانی اور من موہن کا وسیع تر امور پر تبادلہٴ خیال


گیلانی اور من موہن کا وسیع تر امور پر تبادلہٴ خیال

نیروپما راؤ نے بتایا کہ بھارت اور پاکستان کے وزرائے اعظم نے وسیع تر تبادلہٴ خیال کیا ہے اور بھارت اور پاکستان کے رشتوں میں اہمیت کے حامل متعدد امور پر بات چیت کی ہے

بھارت اور پاکستان کے وزرائے اعظم ڈاکٹر من موہن سنگھ اور یوسف رضا گیلانی نے موہالی میں بھارت پاک کرکٹ میچ کے دوران عشائیے کے موقع پر متعدد امور پر تبادلہٴ خیال کیا اور تشدد سے پاک ماحول پر زور دیا تاکہ باہمی تعلقات میں بہتری کو یقینی بنایا جاسکے۔

عشائیے کے بعد جب کہ دونوں ٹیموں کے مابین مقابلہ جاری تھا سکریٹری خارجہ نیروپما راؤ نے نیوز کانفرنس کرکے اِس ملاقات کی اہمیت کو اجاگر کیا۔

اُنھوں نے بتایا کہ دونوں وزرائے اعظم نے متعدد امور پر کھل کر خوش گوار ماحول میں گفتگو کی۔

نیروپما راؤ نے بتایا کہ بھارت اور پاکستان کے وزرائے اعظم نے وسیع تر تبادلہٴ خیال کیا ہے اور بھارت اور پاکستان کے رشتوں میں اہمیت کے حامل متعدد امور پر بات چیت کی ہے۔

اُنھوں نے مزید کہا کہ جب گذشتہ اپریل میں تھمپو میں دونوں وزرائے اعظم کی ملاقات ہوئی تھی ، توبھارت نے اُسے ’تھمپو اسپیڈ‘ کا نام دیا تھا۔ ’اِسی طرح، آج یہ کہنا مناسب ہوگا کہ آج موہالی اسپیڈ کو باہمی رشتوں میں اہمیت حاصل ہوگئی ہے۔‘

نیروپما راؤ کے مطابق ڈاکٹر من موہن سنگھ نے اپنے پاکستانی ہم منصب سے کہا کہ ہمیں اپنے ملکوں کے مسائل کو حل کرنے کے لیے روایتی دشمن کو پیچھے چھوڑنا ہوگا اور مل کر باہمی تنازعات کو ختم کرنا ہوگا۔

ایک سوال کے جواب میں نیروپما راؤ نے کہا کہ ہم نے 26/11حملوں کے معاملے کو پسِ پشت نہیں ڈالا ہے اور باہمی مذاکرات میں اِسے نظرانداز نہیں کیا۔

سکریٹری خارجہ نے بتایا کہ اگلے ماہ دونوں ملکوں کے سکریٹری کامرس کے مابین مذاکرات ہوں گے اور وہ اِس سال کے وسط میں اپنے پاکستانی ہم منصب سے ملاقات کریں گی۔

اِس موقعے پر پاکستانی وزیر ِ اعظم نے ڈاکٹر سنگھ کو دورہٴ پاکستان کی پھر دعوت دی جِس کی تاریخ باہمی تبادلہٴ خیال سے طے کی جائے گی۔

XS
SM
MD
LG